خود کو نقصان

خود کو نقصان پہنچانے سے بچنے کے طریقے

تھراپی کے ذریعے پوشیدہ مسائل حل کرنا اور دھیان بٹانے کے مختلف طریقوں کو استعمال کرتے ہوئے خود کو نقصان پہچانے سے بچا جاسکتا ہے لیکن اس کے لیئے کچھ وقت، کوشش اور بہت ساری قوتِ خود ارادیت درکار ہے۔
وہ لوگ کو خوس کو اس نیت سے نقصان پہنچاتے ہیں کہ وہ اپنے آپ کو درد پہنچاسکیں وہ اس درد کو محسوس کرنے کے بعد ذہنی طور پر آرام محسوس کرتے ہیں لیکن یہ جذبات کے اظہار کا کوئی مناسب طریقہ نہیں ہے۔ اگر آپ خود کو نقصان پہنچانے کے بارے میں سوچتے ہیں تو آپ کے لیئے یہ جاننا بہت ضروری ہے کہ یہ اپنے جذبات کے اظہار کا کوئی آخری طریقہ نہیں ہے بلکہ یہ بالکل بھی صحیح طریقہ نہیں۔
ہم یہاں کچھ ایسے طریقے بیان کرنے جارہے ہیں جن سے آپ کو اس خیال سے خود کو دور رکھنے میں مدد ملے گی۔


ڈیجیٹل ایپلی کیشنز (کمپیوٹر / موبائل پروگرام)

ایسی بہت ساری ایپلی کیشن موجود ہیں جو کہ خاص طور پر صارفین کو دھیان بٹانے اور خود کو نقصان پہنچانے سے بچنے کے طریقوں اور تجاویز کو سامنے رکھتے ہوئے بنائی گئی ہیں۔ کچھ مشہور ایپ میں Calm Harm ، Self-Heal ، اور What's Up شامل ہیں۔ حالانکہ ہر ایپ میں اپنی الگ خصوصیات موجود ہیں لیکن سب کا بنیادی مقصد صارف کو خود کو نقصان پہنچانے کے خیالات سے دور لے جانا ہے جب تک کہ منفی سوچ کا خاتمہ نہ ہوجائے۔ مثال کے طور پر Calm Harm ڈی بی ٹی کی بنیاد پر مختلف قسم کی سرگرمیاں فرام کرتا ہے جو کہ مختلف درجات میں تقسیم ہیں۔ ایپ کا ایک مددگار پہلو تمام سرگرمیوں کا ریکارڈ محفوظ رکھنا ہے جس کی مدد سے آپ یہ جان سکتے ہیں کہ کس وقت آپ خود کو نقصان پہچانے کے خیال کا شکار ہوئے اور اس خیال کی شدت کیا تھی۔ ایپلی کیشن Self-Heal کا ایک زبردست پہلو حوصلہ افزا اقتباسات کا مجموعہ ہے جو کہ صارف کو ایسے وقت میں اپنے جذبات پر قابو کرنے میں مدد دیتا ہے جبکہ خود کو نقصان پہنچانے کا خیال اس کے دماغ پر حاوی ہورہا ہوتا ہے۔


مدد لینا

جب آپ کو یہ محسوس ہو کہ آپ خود پر قابو کھوتے جارہے ہیں اور خود کو نقصان پہنچاسکتے ہیں تو آپ کو چاہیئے کہ کسی ایسے انسان سے بات کریں جو کہ آپ کے ذہن سے اس خیال کو دور کرنے میں آپ کی مدد کرسکے۔ یہ ضروری نہیں ہی کہ اس گفتگو کا موضوع خود کو نقصان پہنچانے سے متعلق ہو، بلکہ یہ گفتگو کسی بھی موضوع پر کی جاسکتی ہے۔ اگر ان حالات میں آپ کسی ماہر ذہنی معالج سے گفتگو کریں تو ا س سے آپ کو زیادہ فائدہ ہوگا کیونکہ وہ گفتگو کے دوران ان تمام پوشیدہ پہلووؤں کے بارے میں جاننے کی کوشش کریگا جو کہ ان خیالات کا سبب ہیں تا کہ اس خیال کا ہمیشہ کے لیئے خاتمہ کیا جاسکے۔




ڈائری لکھنا

کچھ لوگ ایپلی کیشن استعمال کرنے سے زیادہ ڈائری لکھنے کو فائدہ مند سمجھتے ہیں۔ کیا آپ نے کبھی اپنے منفی خیالات کو لکھ کر ختم کرنے کی کوشش کی ہے؟ جب بھی آپ خود کو نقصان پہنچانے کے بارے میں سوچتے ہیں، آپ ان خیالات کے بارے میں لکھ سکتے ہیں، ایسا کرنے سے نا صرف آپکا دھیان بٹ جائے گا بلکہ یہ آپ کے اس وقت کے جذبات اور حالات کی نشاندہی کرنے میں بھی مددگار ثابت ہوگا۔ کیا آپ کو اپنے ان خیالات کو تحریر کرتے ہوئے گھبراہٹ اور پریشانی کا سامنا ہے؟ اگر آپ کو لگتا ہے کہ آپ گھبراہٹ کا شکار ہورہے ہیں تو آپ اس کے بعد کوئی ایسی سرگرمی انجام دے سکتے ہیں جس سے آپ اچھا محسوس کرسکیں۔ روح برو کی ویب سائٹ پر گھبراہٹ اور پریشانی کو دور کرنے کی مختلف سرگرمیاں موجود ہیں جن سے آپ کو بہتر محسوس ہوگا۔
یہاں جرنل کا لنک دیا گیا ہے جس میں آپ اپنے خیالات تحریر کرسکتے ہیں۔
Insert the "click here" tab for diary


پُر سکون ہونے کے طریقے

تحقیق کے مطابق، خود کو نقصان پہنچانے کے خیالات سے بچنے کا بہترین طریقہ مثبت سوچ اور رویہ ہے۔ ایسا کرنے کے ایک سے زائد طریقے موجود ہیں۔ تھراپسٹ اکثر مصوری کرنے کی تجویز پیش کرتے ہیں کیونکہ اس میں دماغ اور جسم دونوں شامل ہوتے ہیں۔ مصوری کے ذریعے جذبات کا اظہار نا صرف انفرادی طور پر فائدہ مند ہوتا ہے بلکہ یہ تھراپسٹ کے لیئے بھی مریض کے جذبات اور ذہنی کیفیت کو سمجھنے میں مددگار ثابت ہوتی ہے۔ موسیقی سننا بھی سکون حاصل کرنے کا ایک طریقہ ہے۔ یہ ایک طریقۂ علاج کے طور پر ثابت شدہ ہے کیونکہ اس سے ذہن میں مثبت اور خوشیوں بھرے جذبات پیدا ہوتے ہیں۔
جب انسان جذبات کا بوجھ محسوس کرتا ہے تو وہ خود کو نقصان پہنچانے کی کوشش کرتا ہے، پُر سکون ہونے کے کچھ مزید طریقے یہاں بیان کیے گئے ہیں جو کہ آپ کے لیئے مددگار ثابت ہوسکتے ہیں۔
۔ کسی ماہرِ مساج سے ایک بہترین مساج لیں ۔ اس سے آپ کا ذہنی دباؤ کم ہوگا اور اور آپ کے پٹھوں کو آرام ملے گا اور آپ کا ذہن اور جسم سکون محسوس کریگا۔
۔ اپنے کسی پیارے کے ساتھ وقت گزاریں اور ان کے ساتھ اپنے جذبات بانٹیں ۔ اس سے آپ کی گھبراہٹ کم ہوگی۔
۔ اپنے کمرے میں پُر سکون ماحول بنائیں مثلاً خوشبودار موم بتیاں جلانا ، مدھم روشنیاں جلانا، یا پھر اپنی پسند کے مطابق کچھ ایسا ماحول تیار کرنا جس سے آپ کو سکون محسوس ہوسکے۔


حوالہ جات
۱) دھیان بٹانے اور خود کو نقصان پہنچانے کے متبادل طریقے

https://www.rcpsych.ac.uk/PDF/Self-Harm%20Distractions%20and%20Alternatives%20FINAL.pdf
سے حاصل کردہ۔
۲) ڈاوسن آر، نوجوانوں کے لیئے ایپلی کیشن جو خود کو نقصان پہنچانے میں ملوث ہیں،
https://thepsychologist.bps.org.uk/volume-30/july-2017/apps-teenagers-who-are-self-harming
سے حاصل کردہ۔
۳) ڈی اینجلس ٹی، کون خود کو نقصان پہنچاتا ہے؟ ۲۰ ، جون ۲۰۱۸
http://www.apa.org/monitor/2015/07-08/who-self-injures.aspx
سے حاصل کردہ ۔
۴) ہمفریز کے ڈی، رزنر ڈبلیو، ہکس جے ایف اور مئیر ایم ، خودکشی کی نیت کے بغیر خود کو نقصان پہنچانا، درد سے گزرنا۔
https://www.counseling.org/docs/default-source/vistas/article_4486fd25f16116603abcacff0000bee5e7.pdf?sfvrsn=4
سے حاصل کردہ ۔
۵) کلونسکی ای ڈی، وکٹر ایس ای اور سافر بی وائی، خودکشی کی نیت کے بغیر خود کو نقصان پہنچانا: کیا ہم جانتے ہیں اور کیا ہمیں جاننے کی ضرورت ہے؟ کینیڈین جرنل آف سائیکٹری
۶) خود کو نقصان پہنچانا۔ خود کی مدد کرنا
https://www.rethink.org/diagnosis-treatment/symptoms/self-harm/self-help
سے حاصل کردہ
۷) خود کو نقصان پہنچانے سے متعلق سچ، ۶ فروری ۲۰۱۸
https://www.mentalhealth.org.uk/publications/truth-about-self-harm
سے حاصل کردہ۔
۸) اسمتھ ایم، سیگل جے، روبنسن ایل، شوبینہ جے، خود کو نقصان پہنچانا اورکاٹنا
https://www.helpguide.org/articles/anxiety/cutting-and-self-harm.html
سے حاصل کردہ

اگلا موضوع پڑھیں 

  پی پی ڈی