ذہنی بیماریاں

مجھے اسکیزوفرینیا کی بیماری ہے، میں خود اسکیزو فرینیا نہیں ہوں۔ میں بذات خود اپنی ذہنی بیماری نہیں ہوں، میری بیماری میرا ایک حصہ ہے۔
جوناتھن ہرنش، ایک مصنف-


تعارف:

اسکیزو فرینیا ایک طویل عرصے تک رہنے والی اور شدید ذہنی بیماری ہے جو کہ ایک انسان کے سوچنے سمجھنے اور محسوس کرنے کی صلاحیت اور اسکے برتاؤ پر اثر انداز ہوتی ہے۔ اسکیزو فرینیاکے شکار افراد حقیقت اور خیالات کے درمیان فرق کرنے کی صلاحیت کھودیتے ہیں اور جیسے جیسے بیماری بڑھتی جاتی ہے وہ حقیقت سے دور ہوتے چلے جاتے ہیں۔ اس بیماری کے شکار افراد بالآخر اپنی ذات میں مگن، جذبات اور احساسات سے عاری ہوجاتے ہیں اور خود کو معاشرتی سرگرمیوں سے لا تعلق کرلیتے ہیں۔
اسکیزو فرینیا کے شکار افراد کو معاشرے میں اشتعال انگیز اور خطرناک سمجھا جاتا ہے جو کہ بالکل غلط ہے۔ حالانکہ اسکیزو فرینیا کے شکار افراد کا خود کو الگ تھلگ کرلینا اس رویہ کا نتیجہ ہے جو کہ لوگ ذہنی امراض میں مبتلا لوگوں کے ساتھ رکھتے ہیں، اور ان کے لیئے سہارا نہیں بنتے جو کہ صورتِ حال کو مزید خراب کردیتا ہے۔

البتہ دماغی بیماریوں مثلاً اسکیزو فرینیا کی اصل وجوہات اب تک واضح نہیں ہیں، تحقیق کاروں نے کئی سالوں کی محنت کے بعد کچھ ایسے عوامل علیحدہ کیئے ہیں جو کہ اسکیزو فرینیا کے پیدا ہوجانے میں اہم کردار ادا کرتے ہیں۔
۱) جنیات  (Genetics) ۔ یہ کسی انسان میں پیدائشی طور پر شامل ہوتی ہے اور نسل در نسل چلتی رہتی ہے۔
۲) حیاتیات  (Biologics)۔ کیمیائی عدم توازن  (Chemical imbalance) کی وجہ سے دماغ کی ساخت اور کام کاج میں بے قاعدگی ہونا
۳) وائرل انفیکشن ( Viral Infections)  اور قوتِ مدافعت کی خرابی  (Immune System Disorder)
۴) غصے کے دورے پڑنا اور ذہنی دباؤ

نشانیاں اور علامات:

بہت سی چیزیں مشترک ہونے کے باوجود، اسکیزو فرینیا کی ابتدائی علامات ہر انسان میں الگ الگ ہوتی ہیں۔ یہ علامات آہستہ آہستہ کسی انسان میں پرورش پاسکتی ہیں یا پھر اچانک سامنے آسکتی ہیں۔ عام طور پر یہ علامات سولہ (۱۶) سے تیس (۳۰) سال کی عمر میں واضح ہوتی ہیں لیکن چند غیر معمولی صورتِ حال میں سولہ (۱۶) سال سے کم عمر افراد میں بھی یہ علامات ظاہر ہونا شروع ہوجاتی ہیں۔
اسکیزو فرینیا کی علامات کو تین بہت واضح اقسام میں تقسیم کیا گیا ہے جن میں مثبت (Positive)، منفی (Negative) اور دماغی (Cognitive) اثرات اور علامات شامل ہیں۔

۱) مثبت  علامات  (Positive Symptoms) : ایسا ذہنی برتاؤ جو کہ عام طور پر صحت مند انسانوں میں نہیں دیکھا جاتا۔ جو افراد ان مثبت علامات کو ظاہر کرتے ہیں وہ حقیقت کے کچھ پہلوؤں سے رابطہ منقطع کردیتے ہیں۔ ان علامات میں شامل ہیں:
۔ فریبِ نظر (غلط تجربات اور رائے قائم کرلینا)(Hallucination)
۔ دھوکہ (غلط یقین) (Illusion)
۔ بے ترتیب گفتگو
۔ خیالات کی بے ترتیبی (غیر معمولی اور منتشر انداز میں سوچنا)
۔ حرکات میں خرابی ( جسم میں بے چینی کے اثرات نمایاں ہونا)

۲) منفی علامات (Negative Symptoms)  : یہ عام طور پر ظاہر کیئے جانے والے جذبات اور برتاؤ میں رکاوٹ کو ظاہر کرتے ہیں جن میں مندرجہذیل علامات شامل ہیں:
۔ ’’فلیٹ افیکٹ‘‘ (Flat affect)یا جذبات سے عاری رویہ (چہرے اور تاثرات اور آواز کے انداز سے جذبات کا اظہار کرنے میں کمی)
۔ روزمرہ زندگی میں خوشی محسوس کرنے میں کمی
۔ مختلف سرگرمیوں کی شروعات اور انہیں جاری رکھنے میں مشکلات 
۔ بات چیت میں کمی

۳) دماغی علامات (Cognitive Symptoms)  : کچھ لوگوں میں یہ کم اور کچھ میں بہت شدید ہوسکتی ہیں جس کی وجہ سے مریض اپنی یادداشت یا سوچنے سمجھنے کے انداز میں تبدیلی محسوس کرتا ہے ۔ اسکی علامات میں شامل ہیں:
۔ معلومات کو سمجھنے اور اسے فیصلہ لینے کے لیئے استعمال کرنے کی صلاحیت سے محرومی
۔ کسی چیز کو سمجھنے اور اس پر توجہ دینے میں مشکلات
۔ ’’ورکنگ میموری‘ ‘ (Working Memory) یا معلومات کو سیکھنے کے ساتھ ہی استعمال کرنے کی صلاحیت میں مسائل کا سامنا کرنا

۴) دیگر علامات میں شامل ہیں:
۔ احساسات اور حوصلہ افزا رویہ کی شدید کمی
۔ کارکردگی کم ہوجانا
۔ معاشرتی قطع تعلق 
۔ نیند میں مشکلات
۔ صحت میں خرابی اور اپنا خیال نہ رکھنا
۔ نا مناسب اور بے معنی گفتگو (ایک موضوع سے دوسرے موضوع پر بات کرنے لگ جانا، نئے الفاظ تشکیل دینا جنکا کوئی مطلب ہی موجود نہ ہو یا ایک ہی موضوع پر ٹکے رہنا )

اسکیزو فرینیا کی اقسام:

۱) ڈیلیوژنل ڈس آرڈر (Delusional Disorder ) :

یہ بیماری فریب اور دھوکہ کی کیفیت پر مشتمل ہوتی ہے جسکا دورانیہ ایک مہینے تک کا ہوتا ہے اور اس دوران کوئی اورذہنی پریشانی کی علامت (Psychotic Symptom) ظاہر نہیں ہوتی۔

۲) بریف سائیکوٹک ڈس آرڈر ( Brief Psychotic Disorder):

اس بیماری میں صرف ایک ماہ کے عرصے کے لیئے ایک یا ایک سے زائد مثبت علامات   (Positive Symptoms)   موجود رہتی ہیں ۔ ایک ماہ کے عرصے کے اندر اس بیماری سے مکمل نجات حاصل ہوجاتی ہے۔

۳) اسکیزو فرینی فورم ڈس آرڈر (Schizophreniform Disorder):

ایک ماہ سے چھ ماہ تک کے عرصے کے لیئے ایک مثبت علامت  (Positive Symptoms) کے ساتھ ساتھ ایک منفی علامت   ( SymptomsNegative )   یا بے ترتیب اور مستقل طور پر ایک جیسا برتاؤ ظاہر ہونا۔

۴) اسکیزو فرینیا (Schizophrenia):

چھ ماہ سے زائد عرصے کے لیئے ایک مثبت  علامت     (Positive Symptoms) کے ساتھ ساتھ ایک منفی علامت   (Negative Symptoms)  یا بے ترتیب اور مستقل طور پر ایک جیسا برتاؤ ظاہر ہونا۔

۵) اسکیزو افیکٹو ڈس آرڈر (Schizoaffective Disorder):

اسکیزو فرینیا کی کیفیت کا شکار ہونے کے ایک مہینے کے دوران مینک (Manic Episode) اور میجر ڈپریسو (Major Depressive Episode) دورے پڑنا۔
کوئی بھی انسان اگر دو ہفتوں سے زیادہ ان علامات کو محسوس کرے تو اسے فوری طور پر مدد لینی چاہیئے۔ مدد کے لیئے ہم سے رابطہ کریں، رُوح برو۔ آئیے بات کریں۔


!ہم سے رابطہ کریں ، روح برو - آئیں بات کریں


 تھراپی حاصل کریں 


پڑھیں کھانے پینے کے ان رویے کے بارے میں جو بیماریوں میں شمار ہوتے ہیں

 خوراک اور کھانا پینا