ذہنی صحت


صحت مند ہونے سے کیا مراد ہے؟ عالمی صحت کی تنظیم ’’ورلڈ ہیلتھ آرگنائزیشن‘‘ (World Health Organization (WHO)) کے مطابق صحت صرف کسی مرض میں مبتلا نہ ہونے کا نام نہیں بلکہ جسمانی، ذہنی اور سماجی طور پربہتر ہونے کا نام ہے ۔ جسمانی امراض کو جاننا سمجھنا اور دیکھ بھال کرنا آسان ہوتا ہے لیکن ذہنی اور سماجی پہلو کو نظر انداز کردیا جاتا ہے تاہم جسمانی صحت کے ساتھ ساتھ ہمارے لیے نفسیاتی، جذباتی اور روحانی طور پر صحت مند ہونا بہت ضروری ہے تا کہ ہم معاشرتی طور پر جڑے رہیں اور اپنی شخصیت کے بارے میں زیادہ سے زیادہ جان کر اپنا معیارِ زندگی بہتر بنا سکیں۔

صحت کے معاملے میں سب سے اہم معاملہ ذہنی صحت ہیں لیکن ہمارے معاشرے میں اس کے بارے میں بات کرنا پسند نہیں کیا جاتا، جسمانی صحت کے مقابلے میں کم تر سمجھا جاتا ہے اور اس کی جانب سب سے کم توجہ دی جاتی ہے ۔ ذہنی صحت سے ہماری کیا مراد ہے؟ ذہنی صحت ہمارے نفسیاتی اور جذباتی کیفیت کے درست ہونے کا نام ہے جس کی عالمی صحت کی تنظیم ’’ورلڈ ہیلتھ آرگنائزیشن‘‘ (World Health Organization (WHO)) یوں تعریف بیان کرتی ہے کہ یہ اس کیفیت کا نام ہے جس میں ہر فرد کو اپنی صلاحیتوں کا مکمل علم ہو اور روز مرہ زندگی کے معمولات بخیر و خوبی انجام دے سکے اور اپنی صلاحیتوں کا استعمال کرتے ہوئے معاشرے میں اہم اور مفید کردار ادا کرسکتا ہو۔

ذہنی صحت ہمارے سوچنے، محسوس کرنے اور عمل کرنے کی صلاحیت پر اثر انداز ہوتی ہے۔اسے اس طرح جانچا جا سکتا ہے کہ ہم اپنی روز مرہ کی زندگی میں کس طرح اندرونی اور بیرونی عوامل کو سمجھتے اور ان سے نمٹتیہیں۔ان عوامل میں مختلف قسم اور نوعیت کے ذہنی دباؤ ، بے چینی، خود اعتمادی اور سماجی تعلقات شامل ہیں۔ان عوامل کے ہم پر ہونے والے مثبت اور منفی اثرات کی شرح سے ہمیں ہماری ذہنی صحت کو سمجھنے میں مدد ملتی ہے۔البتہ ہم مختلف مہارتوں، وسائل اور طریقوں کو سیکھتے ہوئے اپنے حالات کا سامنا کر سکتے ہیں جس کی مدد سے ہماری ذہنی نشوونما ہوتی ہے اور ہم دماغی طور پر مضبوط بنتے ہیں۔



 ذہنی مرض کے بارے میں جانیں    

  ذہنی مرض