ذہنی بیماریاں

اداسی سب سے ناخوشگوار چیز ہے جس کا میں نے اب تک تجربہ کیا ہے۔ یہ ایک ایسی کیفیت ہے جس میں اس سوچ کی عدم موجودگی کا سامنا کرنا پڑتا ہے کہ ہم دوبارہ کبھی خوش رہ سکیں گے۔ امید کی غیر حاضری۔ یہ ایک ایسی کیفیت ہے جو کہ انسان کو اندرونی طور پر کمزور بنادیتی ہے جو کہ صرف غمگین ہونے کی کیفیت سے بہت مختلف ہے۔ غم زدہ ہونا تکلیف دیتا ہے مگر یہ ایک صحتمند کیفیت ہے جو کہ محسوس کرنا بہت ضروری ہے۔ اداسی کی کیفیت اس سے بہت مختلف ہے۔
جے۔کے رولنگ ، ہیری پوٹر سیریز کی مصنفہ-


تعارف:

اُداسی ایک ایسا جذبہ ہے جو کہ ہر انسان کسی نہ کسی طریقے سے اپنی زندگی میں محسوس کر چکا ہے جو کہ عام طور پر زندگی میں آنے والے مشکل اوقات کے ردعمل کے طور پر سامنے آتا ہے۔تاہم اُداسی کا یہ احساس گزرتے وقت کے ساتھ ختم ہوجاتا ہے۔ لیکن اگر ایک انسان ان مشکلات کو خود پر سوار کرلے، زندگی کو بے معنی سمجھنے لگے اور اپنی ذات کی قدر و قیمت کھونے لگے تو یہ کیفیت اسکے لیئے نقصان دہ ثابت ہوتی ہے اور اس کے دماغ اور جسم کو مفلوج کردیتی ہے، اور پھر یہ اس کیفیت میں تبدیل ہوجاتی ہے جسے عام طور پر مایوسی اور افسردگی کی بیماری (Depressive Disorder) کا نام دیا جاتا ہے۔ مایوسی اور افسردگی کی بیماری (Depressive Disorder) کچھ دنوں کے لیئے ناخوش ہونے اور بیزار ہونے سے کچھ زیادہ ہے، جب کوئی انساناس کا شکار ہوتا ہے تو وہ کچھ دنوں کے بجائے ہفتوں، مہینوں بلکہسالوں تک اداسی اور بیزاریت کا شکار رہتا ہے۔

آج بھی دنیا میں لوگ یہ سمجھتے ہیں کہ مایوسی اور افسردگی کی بیماری (Depressive Disorder) کی کوئی اہمیت نہیں اور یہ کوئی حقیقی بیماری نہیں۔ یقیناًیہ لوگ غلط ہیں، یہ ایک حقیقی بیماری ہے جس کی واضح علامات موجود ہیں۔ یہ بیماری محض’’ کمزوری کی علامات ‘‘سے بہت زیادہ ہے اور نہ ہی یہ کوئی ایسی کیفیت ہے کہ اپنے آپ کو سنبھال لینے یا تفریح کرنے سے اس سے چھٹکارا حاصل کرلیا جائے۔

علامات اور نشانیاں:

مایوسی اور افسردگی کی بیماری (Depressive Disorder)کی تمام بیماریاں ایک جیسی علامات اور نشانیاں رکھتی ہیں، البتہ مختلف اقسام میں بیماری کے حساب سے علامات اور نشانیاں موجود ہوتی ہیں۔ ICD اور DSM-V کے مطابق، مایوسی اور افسردگی کی بیماری (Depressive Disorder) کی علامات کو تین مختلف سطح پر تقسیم کیا جاسکتا ہے جو کہ مندرجہ ذیل ہیں:

۱) نفسیاتی علامات:
أٌ۔ مسلسل اداسی اوربد مزاجی
۔ نا اُمیدی اور بے بسی محسوس کرنا
۔ خوداعتمادی کی کمی
۔ رونے کی کیفیت محسوس کرنا
۔ اپنے آپ کو مجرم سمجھنا
۔ چڑچڑا پن محسوس کرنا اور دوسروں کے لیئے برداشت کم ہونا
۔ چیزوں میں کسی قسم کی دلچسپی اور توجہ نہ لینا
۔ فیصلہ لینے میں مشکلات کا سامنا کرنا
۔ زندگی سے کسی قسم کی خوشی حاصل نہ کرپانا
۔ فکر مند اور پریشان رہنا
۔ خودکشی کرنے اور خود کو نقصان پہنچانے کے خیالات سوچنا

۲) جسمانی علامات:
۔ عام حالات سے کم رفتار میں چلنا اور بات کرنا 
۔ بھوک کے معمولات اور وزن میں تبدیلی ( عام طور پر کمی واقع ہوتی ہے لیکن کبھی کبھار اضافہ بھی ہوجاتا ہے)
۔ قبض ہوجانا
۔ ناقابلِ بیان درد اورتکالیف محسوس کرنا
۔ توانائی اور ہمت کی کمی
۔ جنسی خواہشات میں کمی 
۔ ماہواری میں تبدیلی
۔ نیند کے معمول میں خلل ۔ مثلاً رات کو سونے میں دشواری ہونا یا صبح جلدی اٹھ جانا

۳) معاشرتی / پیشہ ورانہ علامات:
۔ کام میں بہتر کارکردگی نہ دے پانا
۔ دوستوں سے قطع تعلق کرلینا اور کم سے کم سماجی سرگرمیوں میں حصہ لینا
۔ اپنے مشغلوں اور دلچسپیوں کو نظر انداز کرنا
۔ اپنے گھر اور گھریلو زندگی میں مشکلات کا سامنا کرنا
مایوسی اور افسردگی کی بیماری (Depressive Disorder)کی شدت:

عام طور پرمایوسی اور افسردگی کی بیماری (Depressive Disorder)کو اس پیمانے سے ناپا جاتا ہے کہ یہ آپکی زندگی پر کس حد تک اثرانداز ہوتا ہے اور اسے یہ نام دیئے جاسکتے ہیں:
کم یا ہلکا ۔ اسکی علامات نظرآنے کے قابل ہوتی ہیں اور روزمرہ زندگی کو متاثر کرتی ہیں۔ اسکا شکار انسان ان سرگرمیوں میں دلچسپی دکھانا کم کردیتا ہے جن سے وہ پہلے بہت لطف اندوز ہوا کرتا تھا۔
معتدل یا درمیانی ۔ اس کیفیت میں علامات واضح طور پر موجود ہوتی ہیں اور روزمرہ سرگرمیوں پر اسکا بہت اہم اثر پڑتا ہے۔

شدید۔ روزمرہ زندگی کے معمولات سے نمٹنا مشکل ترین ہوجاتا ہے ، اس کیفیت کے شکار کچھ افراد دذہنی پریشانی کی علامات (psychotic symptoms) بھی ظاہر کرتے ہیں۔

مایوسی اور افسردگی کی بیماری (Depressive Disorder) کی اقسام:

حالانکہ مایوسی اور افسردگی کی بیماری (Depressive Disorder)کی تمام اقسام ایک جیسی خصوصیات رکھتی ہیں لیکن کچھ ایسے عناصر موجود ہیں جن کی مدد سے ان میں فرق کرتے ہوئے تشخیص کو آسان بنایا جاسکتا ہے۔ ذیل میں اس کی مختلف اقسام اور انکے بارے میں مختصر وضاحت بیان کی گئی ہے۔

۱) ڈسٹرپٹو موڈ ڈس ریگولیشن ڈس آرڈر( Disruptive Mood Dysregulation Disorder) :

یہ بیماری چھ سال سے سترہ سال تک کی عمر کے افراد میں موجود ہوتی ہے۔ اس میں شدید قسم کے غصے دورے پڑتے ہیں جیسا کہ چیخنا چلانا یاجسمانی حملے کرنا جس کی اکثر اوقات کوئی وجہ نہیں ہوتی یا کسی معمولی بات پر یہ ردعمل سامنے آتا ہے۔ ۔ اس طرح کے دورے کہیں بھی کسی بھی حالات میں پڑ سکتے ہیں مثلاً اسکول، گھر وغیرہ۔ اگر تقریباً ایک سال کے عرصے تک اس طرح کے دورے پڑتے رہیں کہ ہفتے میں کئی بار انسان غصے سے پھٹ پڑے تو اس بیماری کو تشخیص کیا جاسکتا ہے۔

۲) میجرڈ پریسوڈس آرڈر(Major Depressive Disorder):

ڈپریشن کی ایسی کیفیت جو کہ شدید نوعیت کی ہو اور مسلسل دو ہفتوں تک موجود رہے۔ اسکی علامات اتنی سخت ہوں کہ انسان کی روزانہ زندگی پر بُری طرح اثرانداز ہوں اور یہ کیفیت ایک بار یا کئی بار واقع ہو۔

۳) پرسسٹنٹ ڈ پریسوڈس آرڈر(ڈستھمیا) (Persistent Depressive Disorder (Dysthymia)):

اسے نچلی سطح کی اداسی بھی کہتے ہیں۔ یہ کیفیت افسردگی اور میجرڈ پریسوایپیسوڈ (Major Depressive Episode)کی دیگر دو علامات پر مشتمل ہوتی ہے جو کہ دو سال کے طویل دورانیے پر مشتمل ہے (بچوں میں اسکا دورانیہ ایک سال ہے)۔ میجرڈ پریسوڈس ایپیسوڈ      (Major Depressive Episode) کے بارے میں معلومات، بائی پولر ڈس آرڈر (Bipolar Disorder) کے حصے میں درج ہیں۔

۴) پری مینسٹیورل ڈسفورک ڈس آرڈر (Premenstrual Dysphoric Disorder (PMDD)):

ماہواری کے آغاز پر اور اس سے کچھ قبل خواتین میں اداسی اور افسردگی کی علامات ظاہر ہوتی ہیں۔

مایوسی اور افسردگی کی بیماری (Depressive Disorder)  نا صرف اس کے شکار انسان کے لیئے شدید تکلیف کا سبب بنتی ہے بلکہ وہ تمام لوگ جواس انسان کی پرواہ کرتے ہیں وہ بھی ذہنی اذیت کا شکار رہتے ہیں۔ مختلف وجوہات جیسا کہ معاشرتی بدنامی، معلومات ، آگاہی، رسائی اور مدد کی کمی کی وجہ سے اکثر لوگ تشخیص اور علاج نہ کیے جانے والے ڈپریشن کے اپنی زندگی پر پڑنے والے منفی اثرات کو نظر انداز کردیتے ہیں یا پھر انہیں غیر اہم سمجھتے ہیں۔ وہ لوگ جواس بیماری سے لڑ رہے ہیں، ہم سے رابطہ کریں، رُو ح برو۔ آئیے بات کریں۔


References:

[1] Morrison, J. (2014).  DSM-5 made easy: The Clinician’s guide to Diagnosis. New York: Guilford Press.   

[2] Anxiety. (n.d.). Retrieved from http://www.apa.org/topics/anxiety/   

[3]American Psychiatric Association. (2013). Diagnostic and statistical manual of mental disorders: DSM-5. Washington, D.C: American Psychiatric Association.

!ہم سے رابطہ کریں ، روح برو - آئیں بات کریں


 تھراپی حاصل کریں 


 ذہنی پریشانیوں کے بارے میں سیکھنا چاہیں گے؟ آگے پڑھیے 

  اسکیزو فرینیا